پاکستان افغانستان کے تعلیمی شعبے کی ترقی ، تعلیمی اداروں کی استعدادِ کار میں اضافے کیلئے ہر ممکن تعاون جاری رکھے گا:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی

اسلام آباد (سی این پی):صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان کے تعلیمی شعبے کی ترقی ، تعلیمی اداروں کی استعدادِ کار میں اضافے کیلئے ہر ممکن تعاون جاری رکھے گا، افغانستان کی تعمیر ِ نو اور ترقی کیلئے ماہرینِ تعلیم اور تکنیکی ماہرین کی اشد ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو افغان ہائیر ایجوکیشن کے وزیر مولانا عبدالباقی حقانی کی قیادت میں وفد سے ملاقات کےدوران کیا۔ ملاقات میں ہائیر ایجوکیشن کے شعبے میں دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا گیا۔ صدر عارف علوی نے کہا کہ پاکستان افغانستان کے تعلیمی شعبے کی ترقی ، تعلیمی اداروں کی استعدادِ کار میں اضافہ کیلئے ہر ممکن تعاون جاری رکھے گا، افغانستان کی تعمیر ِ نو اور ترقی کیلئے ماہرینِ تعلیم اور تکنیکی ماہرین کی اشد ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان اس وقت مشکل مرحلے سے گزر رہا ہے ، افغا نستان کو انسانی بحران سے بچانے کیلئے عالمی برادری معاشی اور انسانی امداد فراہم کرے ۔ انہوں نے کہا کہ ای سی او کے حالیہ سمٹ میں ممبر ممالک ، عالمی برادری سے افغانستان کی انسانی و معاشی ضروریات کے حل کی بات کی ۔ انہوں نے کہا کہ علامہ اقبال اوپن اور ورچوئل یونیورسٹی آف پاکستان افغان جامعات کے طلباء کو آن لائن تعلیم دینے میں مدد فراہم کریں گے ، نیوٹیک مختلف تکنیکی شعبوں میں تربیت کیلئے ووکیشنل ٹریننگ پروگرام منعقد کرے گا ۔ ملاقات کے دوران افغان وزیر تعلیم نے افغانستان کے تعلیمی شعبے کی تعمیر نو میں کردار پر حکومت پاکستان کا شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی حکام اور وزیر تعلیم کے ساتھ ملاقاتیں نتیجہ خیز رہیں اور اس سے تعلیمی شعبہ میں تعاون میں اضافہ میں مدد ملے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں