بارکھان میں دھماکہ، 4 افراد جاں بحق

بلوچستان کے ضلع بارکھان کے علاقے رکھنی بازار میں دھماکا، 4 افراد جاں بحق جبکہ 12 زخمی ہوئے ہیں۔ حکام کے مطابق دھماکا بارکھان کے رکنی بازار میں صبح کے اوقات میں ہوا، جب لوگ خریداری کیلئے جائے وقوع پر موجود تھے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے میں 4 افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ 12 زخمی ہیں، نعشوں کو ضروری کارروائی، جبکہ زخمیوں کو فوری طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق دھماکے کی نوعیت کا تعین کیا جا رہا ہے جبکہ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ دھماکا خیز مواد موٹرسائیکل میں نصب کیا گیا تھا۔سکیورٹی اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے اور شواہد جمع کر کے تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔پولیس کے مطابق دھماکے میں متعددگاڑیوں، موٹرسائیکلوں اور دکانوں کو نقصان پہنچا ہے۔

شٹر ڈاؤن ہڑتال

دوسری جانب بلوچستان کے ضلع بارکھان کی تحصیل رکھنی بازار میں دھماکے کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی ہے۔

بارکھان شہر کی تمام دکانیں احتجاجاً بند کر دی گئی ہیں۔

رکھنی بازار میں دھماکے کے خلاف تاجر برادری اور سول سوسائٹی کی جانب سے احتجاجی مظاہرہ بھی کیا گیا ہے۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان کی مذمت
دوسری جانب وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے رکھنی دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے انسانی جانوں کے ضیاع پر دلی رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

عبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ بے گناہ اور معصوم افراد کا خون بہانے والے انسانیت کے دشمن ہیں، دہشت گرد اپنے مذموم مقاصد کے لیے بد امنی پیدا کر رہے ہیں، ملک دشمن عناصر کے عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ بلوچستان نے محکمہ داخلہ اور پولیس کو حالیہ دہشت گردی کے واقعات پر سکیورٹی پلان کا جائزہ لینے کی ہدایت کی اور کہا کہ عوام کے جان و مال کا تحفظ اور امن کا قیام ہر صورت یقینی بنایا اور دھماکے کے زخمیوں کو علاج کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں۔

وفاقی وزیر داخلہ
وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ خان نے بھی رکھنی میں دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے قیمتی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار کیا اور شہداء کے لواحقین سے تعزیت کی۔

رانا ثناء اللہ نے دھماکے کی رپورٹ بھی طلب کر لی ہے۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ دہشت گرد بلوچستان میں امن اور ترقی کے دشمن ہیں، دہشتگرد اپنے مذموم مقاصد میں کبھی کامیاب نہیں ہونگے، اللہ تعالیٰ دہشت گرد حملے میں شہید ہونے والوں کے درجات بلند کرے اور انکے لواحقین کو صبر جمیل عطا کرے۔

صوبائی وزیر ضیاء اللہ لانگو
صوبائی وزیر داخلہ ضیاء اللہ لانگو نے رکھنی دھماکے کی مذمّت کرتے ہوئے رپورٹ طلب کر لی اور انسانی جانوں کے نقصان پر رنج و غم کا اظہار کیا۔

ضیاء اللہ لانگو کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں عوام، فورسز اور پولیس کی قربانیوں کے بعد امن بحال ہوا، کسی کو بلوچستان کا امن تباہ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

گورنر سندھ
گورنرسندھ کامران خان ٹیسوری نے بارکھان میں ہونے والے بم دھماکے کی مذمت کی اور دھماکے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں