ایک اور سانحہ 9مئی کی تیاری:علی امین گنڈا پور اور علیمہ خان کی ویڈیو لیک

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)ایک اور سانحہ 9مئی کی تیاریاں ،وزیراعلیٰ علی امین گنڈا پور اور علیمہ خان کی ویڈیو لیک ہوگئی،علیمہ خان نے اڈیالہ جیل کے باہر دھرنے کا اعلان کر دیا ،سوشل میڈیا پرزیر گردش ویڈیو میں سنا اور دیکھا جا سکتا ہے کہ وزیراعلیٰ علی امین گنڈاپور اور عمران خان کی بہن علیمہ خان دیگر پارٹی عہدیداران عمران خان کواڈیالہ جیل سے نکالنے کے لئے مختلف تجاویز پر گفتگو کررہے ہیں۔

ویڈیو میں سنا جا سکتا ہے کہ علیمہ خان کہہ رہی ہیں کہ عمران خان اپنی رہائی کے لئے کال نہیں دیں گے ہمیں کال دینا ہوگا اور اس حوالے سے ہمیں اڈیالہ جیل کے باہر دھرنے کی کال دینی چاہیے ،انہوں نے کہا کہ ہمارے پارٹی کے بہت سے لوگ جیلوں سے رہا ہو رہے ہیں اور انہیں دوبارہ گرفتار کیا جارہا ہے ،اور یہ سارا کام وزیر داخلہ محسن نقوی کررہے ہیں، یہ پہلے بھی ظلم کررہا تھا اور اب بھی ظلم کررہا ہے ہمیں اس کو روکنا ہوگا، انہوں نے کہا کہ اپنی رہائی کے لئے عمران خان کبھی کال نہیں دے گا ہمیں نکلنا ہوگا اور ہم نکلیں گے ،انہوں نے وزیراعلیٰ علی امین گنڈا پور کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ان کو پتہ ہے کہ عمران خان کال نہیں دیں گے ،ہم نے ان سے پوچھ کر انہیں نہیں نکالنا،میں عمران خان کی کال کا انتظار نہیں کر سکتی اور نہ ہی مجھے عمران خان کال کرنے سے روک سکتا ہے ،سب کو تیاری کرلینی چاہیے ،علی امین گنڈا پور کہہ رہا ہے کہ عمران خان کال دے پھر نکلیں گے ایسا ممکن نہیں ہے وہ جیل میں بیٹھ کر کال نہیں دے سکتا ،ہم سب کو تیاری کرنی چاہیے ،انہوں نے اڈیالہ جیل کے باہر دھرنے کا پلان بتاتے ہوئے کہا کہ اس وقت عمران خان کے خلاف تمام کیسز بوگس ہوگئے ہیں اور نئے کیسز بنائے جارہے ہیں ،وزیراعلیٰ محسن ،وزیر اعظم شہباز شریف ،مریم نواز ان کی حکومت ہے اور وہ نیب کے ذریعے کیسز بنانے جارہے ہیں،ہم اڈیالہ جیل کے باہر بیٹھیں گے اور ان نئے کیسزکو بنانے سے روکیں گے اور جب تک عمران خان اڈیالہ جیل سے باہر نہیں آئیں گے ہم وہاں سے نہیں اٹھیں گے ۔

اس موقع پر ویڈیو میں علی امین گنڈا پور کو سنا جا سکتا ہے کہ جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ میں علیمہ خان کی کچھ تجاویز پر اتفاق کرتا ہوں اور کچھ پر نہیں ،اڈیالہ جیل کے باہر دھرنا کوئی عام دھرنا نہیں ہوگا ،وہاں سے ہماری لاشیں اٹھیں گی ،جب ہم اڈیالہ جیل کے لئے روانہ ہوں گے تو گھر والوں اور بچوں کو کو بتائیں گے کہ خدا حافظ ۔عمران خان باہر آئے گا یا پھر ہمارے جنازے پڑھائے جائیں گے،ہم نے زندہ نہیں آناصرف ہماری لاشیں آئیں گی ۔انہوں نے کہا کہ ہماری کال پر کوئی نہیں آئیگا اس کے لئے عمران خان کو ہی کال دینا ہوگی ،عمران خان میڈیا کو کال نہیں دے گا صرف اپنے کارکنوں کو دھرنے کی کال دے گا۔ہم سب کچھ قربان کرنے کے لئے تیار ہیں لیکن اس کے لئے ہمیں عمران خان کے اشارے کا انتظار ہے ۔انہوں نے شکوہ کیا کہ صرف ہمارے صوبے میں تحریک انصاف کی حکومت ہے ،باقی ہر جگہ پر نکمے لوگوں کو ٹکٹ دیئے گئے ہیں اور وہ اس وقت غائب ہیں ۔اس دوران علیمہ خان اپنے موقف پر ڈٹی رہیں اورایک بار پھر علی امین گنڈا پور کو کہا کہ ہمیں عمران خان کی کال کا انتظار نہیں کرنا چاہیے اگر وہ ہمیں روکیں گے تو پھر بھی ہم نہیں رکیں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں