مونال ریسٹورنٹ سیل کرنے کا حکم معطل

سپریم کورٹ آف پاکستان نے مونال ریسٹورنٹ سیل کرنے کا اسلام آباد ہائی کورٹ کا حکم معطل کر دیا۔

عدالتِ عظمیٰ نے فیصلہ دیتے ہوئے مونال ریسٹورنٹ ڈی سیل کرنے کا حکم دے دیا۔

واضح رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے رواں برس 11 جنوری 2022ء کو مارگلہ ہلز نیشنل پارک میں تجاوزات کے خلاف کیس کی سماعت کے دوران مارگلہ پارک میں قائم مونال ریسٹورنٹ کو سر بمہر (سیل) کرنے کا حکم دیا تھا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے مارگلہ ہلز نیشنل پارک میں تجاوزات کے خلاف کیس کی سماعت کرتے ہوئے فیصلہ سنایا تھا۔

مونال ریسٹورنٹ کی انتظامیہ کی جانب سے سپریم کورٹ آف پاکستان میں مونال ریسٹورنٹ کو حکمِ امتناع دیتے ہوئے کھولنے کی استدعا کی گئی تھی جو عدالتِ عظمیٰ نے گزشتہ ماہ مسترد کر دی تھی۔

سپریم کورٹ کا کہنا تھا کہ 2 ہفتے تک تفصیلی فیصلہ نہ آیا تو مناسب حکم جاری کریں گے۔

مونال کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے عدالتِ عظمیٰ کو بتایا تھا کہ ہائی کورٹ کا مختصر حکم نامہ بھی دستخط کے بغیر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں