اسٹیل ملز کی بحالی کے لیئے منظور شدہ اسٹرکچر کے تحت ذیلی کمپنی کو یوٹیلیٹی کنکشنز کی فراہمی ضروری ہے: محمد میاں سومرو

اسلام آباد(سی این پی)وفاقی وزیر نجکاری محمد میاں سومرو اور وزیر توانائی حماد اظہر کی اجلاس کی مشترکہ صدارت۔ اجلاس میں پاکستان اسٹیل ملز اور ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کی نجکاری سے متعلق معاملات زیر غور آئے۔ اہم اجلاس میں وفاقی سیکرٹریز برائے نجکاری، پٹرولیم، وزارت انڈسٹریز اور پاور ڈویژن کے سینئر نمائندوں، مالیاتی مشیران، ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس اور سوئ سدرن گیس کے نمائندوں کی شرکت اجلاس میں سوئ سدرن گیس کی جانب پاکستان اسٹیل ملز کے واجبات کی ادائیگی کے لائحہ عمل پر بریفنگ۔ اسٹیل ملز کی بحالی کے لیئے منظور شدہ اسٹرکچر کے تحت ذیلی کمپنی کو یوٹیلیٹی کنکشنز کی فراہمی ضروری ہے۔ مزید یہ کہ سوئ سدرن گیس اسٹیل ملز کو این-او-سی فراہمی کرے تاکہ نجکاری/بحالی کا عمل بلا تعطل جاری رہے ۔ وفاقی وزیر توانائی کو کابینہ کے فیصلےکے متعلق آگاہ کیا گیا۔
سوئ سدرن گیس غیر وصول شدہ واجبات کی ادائیگی اور وزارت نجکاری کو این او سی دینے سے متعلق معاملہ اپنے بورڈ کو بھیجے گا جلد ہی بورڈ اجلاس میں متعلقہ معاملہ کو حل کریں گے۔ وزیر توانائی کو ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کے لیئے ٹائپ ٹیسٹنگ لائسنس میں توسیع کی سفارش پیش کی گئی۔ ہم پٹرولیم ڈویژن سے لائسنس میں توسیع کی سفارش کرتے ہیں۔ مذکورہ معاملہ این ٹی ڈی سی اور کابینہ کمیٹی برائے نجکاری میں رکھنے کی تجویز۔ لائسنس میں توسیع ہیوی الیکٹریکل کمپلیکس کی نیلامی سے پہلے چاہتے ہیں۔ بعد ازاں وزیر نجکاری نے پرائیویٹائزیشن پروگرام کے جائزہ اجلاس کی بھی صدارت کی۔ پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کیلئے اعلی پائے کے انٹرنیشنل انویسٹرز نے پری کوالیفائیڈ کیا ہے۔ مقررہ مدت کے اندر نجکاری پروگرام مکمل کرنے کیلئے کوشاں ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں